Bollywood
Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar by Naseer Turabi Urdu Poetry || EhdeWafa

Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar by Naseer Turabi Urdu Poetry || EhdeWafa

Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar by Naseer Turabi Urdu Poetry || EhdeWafa Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar by Naseer Turabi Urdu Poetry full gazal.

Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar by Naseer Turabi Urdu Poetry || EhdeWafa

[embedded content]

Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar by Naseer Turabi Urdu Poetry || EhdeWafa

Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar by Naseer Turabi Urdu Poetry full gazal. Agar apko Nasser turabi ki shayari Tujhe Kya KHabar mere be-KHabar gazal pasand ay to isy zror like karain aur hamary channel ko subscribe karain. Naseer Turabi ki urdu shayari k liy hamary channel ko follow karty rahain. sad poetry, sad Shayari, sad ghazal, Ahmad Faraz, Ahmad Faraz Poetry, Ahmad Faraz Whatsapp Status Poetry, Jaun Elia, Jaun Elia Sad Urdu Poetry, Tehzeeb Hafi Tehzeeb Hafi Mushaira Tehzeeb Hafi Rekhta, Ali Zaryoun, Ali Zaryoun Whatsapp Status
Sad Love WhatsApp Status, New Poetry 2020, Sad Poetry Collection, Sad WhatsApp Status Love Sad Status Emotional WhatsApp Status Love Status Sad

تجھے کیا خبر مرے بے خبر مرا سلسلہ کوئی اور ہے 
جو مجھی کو مجھ سے بہم کرے وہ گریز پا کوئی اور ہے 
مرے موسموں کے بھی طور تھے مرے برگ و بار ہی اور تھے 
مگر اب روش ہے الگ کوئی مگر اب ہوا کوئی اور ہے 
یہی شہر شہر قرار ہے تو دل شکستہ کی خیر ہو 
مری آس ہے کسی اور سے مجھے پوچھتا کوئی اور ہے 
یہ وہ ماجرائے فراق ہے جو محبتوں سے نہ کھل سکا 
کہ محبتوں ہی کے درمیاں سبب جفا کوئی اور ہے 
ہیں محبتوں کی امانتیں یہی ہجرتیں یہی قربتیں 
دیے بام و در کسی اور نے تو رہا بسا کوئی اور ہے 
یہ فضا کے رنگ کھلے کھلے اسی پیش و پس کے ہیں سلسلے 
ابھی خوش نوا کوئی اور تھا ابھی پر کشا کوئی اور ہے 
دل زود رنج نہ کر گلہ کسی گرم و سرد رقیب کا 
رخ ناسزا تو ہے روبرو پس ناسزا کوئی اور ہے 
بہت آئے ہمدم و چارہ گر جو نمود و نام کے ہو گئے 
جو زوال غم کا بھی غم کرے وہ خوش آشنا کوئی اور ہے 
یہ نصیرؔ شام سپردگی کی اداس اداس سی روشنی 
بہ کنار گل ذرا دیکھنا یہ تمہی ہو یا کوئی اور ہے
Tags :

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *